رپورٹ کامریڈ ثنا آرگنائیزر نیشنل اسٹوڈنٹس فیڈریشن

پنجاب یونیورسٹی کے پشتون,بلوچ اور پنجابی طلباء کا شیالوجی ڈیپارٹمنٹ سے وی سی آفس تک ریلی اور دھرنا.طلباء بلوچستان کے طلباء کی سیٹوں میں کمی کے خلاف نعرہ بازی کررہے ہیں اور اس نسل پرست رویے کے خاتمے کا مطالبہ کررہے ہیں.اس موقع پر پنجابی طلباء کی طرف سے یونیورسٹی انتظامیہ کے نسل پرست رویے کی شیدید مذمت کی گی.

ظلم کے یہ ضابطے ہم نہیں مانتے۔
انتظامیہ کی غنڈہ گردی نہیں چلے گی۔
طلباء اتحاد زندہ آباد 
پنجاب یونیورسٹی میں ہونے والی انتظامیہ کی غنڈہ گردی کے خلاف بلوچ، پشتون، پنجابی اور این ایس ایف کے طلباء کا متحدہ مظاہرہ. 
اہم مطالبات…

ایکسپیل طلباء کو بحال کیا جائے.
بلوچستان کے طلباء کا کوٹہ واپس 100% کیا جائے.

پشتون بلوچ طلباء پر پچھلے سال درج کیئے گے مقدمات میں دہشت گردی ایکٹ کا ریکارڈ ختم کیا جائے۔
پشتون بلوچ اور پنجابی طلباء کو ڈیپارٹمینٹ کے ذر یعے ڈرانا دھمکانا بند کیا جائے.
ایونیگ میں پڑ ھنے والے طلباء کی فیسوں میں رعایت کی جائے.
– پنجاب کونسل کے 12 طلباء کو بھیجے گیے بلا جواز شوکاز نوٹس واپس لیے جائے اور طلباء کو نہ دھمکایا جائے.
– طلباء کے گھروں میں بھیجے گیے شوکاز نوٹس کا سلسلہ بند کیا جائے اور بلاوجہ والدین کو پریشان نہ کیا جائے.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here