سیز فائر لائین توڑ دو۔۔۔۔بکھری ریاست جوڑدو ۔۔۔آزادی مارچ

0
188

جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کی کال پر آزادی مارچ جو بھمبرے شروع ہوا ہے کوٹلی،تتہ پانی،ہجیرہ،روالاکوٹ اورباغ سے ہوتا ہوا کل رات مظفر آباد پہنچا تھا اور اب چکو ٹھی کی طرف رواں دواں ہے جہاں سے جے کے ایل ایف نے سیز فائر لائین توڑنے کا اعلان کررکھا ہے۔جے کے ایل ایک راہنما عابد حمید کے مطابق مارچ میں شامل شرکاء کی تعداد 45000سے زائد اور اس میں مزید اضافہ بھی متوقع ہے جب کہ دوسری طرف ریاست نے چناری اور دیگر مقامات پر مارچ کو روکنے کی تیاریاں کررکھی ہیں۔اس بات کا خدشہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے کہ اگر مارچ کو روکا گیا تو بڑا تصادم متوقع ہے۔جبکہ دوسری طرف بھارتی میڈیا میں اس صورتحال کو ایک سازش اور حملے کے طور پر پیش کیا جارہا ہے کہ جس کے خلاف بھارتی فوج ہر طرح سے چوکس ہے۔انقلابی سوشلسٹ موومنٹ یہ سمجھتی ہے کہ جے کے ایل ایف کے اس مارچ کی طرف سے سیز فائر لائین توڑنے کی کال ان کا جمہوری حق ہے اور ہم اس مارچ کی حمایت کرتے ہیں اور ان کے راستے میں رکاوٹیں ڈالنے اور ہر طرح کے تشدد کی مخالفت کرتے ہیں۔پاکستان اور بھارت کے محنت کش طبقہ سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اس مارچ پر شرکاء کے جمہوری حق دفاع کریں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here